عباسپور آزاد کشمیر کے گاؤں منگہار میں قتل کی لرزہ خیز واردات، 12 سالہ بچی کوزیادتی کا نشانہ

عباسپور آزاد کشمیر کے گاؤں منگہار میں قتل کی لرزہ خیز واردات، 12 سالہ بچی کوزیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کر کے نعش گٹر میں پھینک دی گئی ، ملزم گرفتار
عباسپور(ٹھاکراسد سے) عباسپور ٹاؤن منگہار وارڈ رقبہ کاپ میں اندھے قتل کی لرزہ خیز واردات کے نتیجہ میں ایک 13 سالہ کلی حلیمہ زاہد بخاری کو انتہائی سفاکی اور وحشت ناک طریقہ سے مسل دیاگیا تفصیلات کیمطابق عباسپور زراعت کے ملازم سید زاہد بخاری کی بیٹی 13 سالہ حلیمہ بخاری کورات کی تاریکی میں اغواکر لیا گیا7 دن سے لاپتہ لڑکی کی نعش نامزد سفاک ملزم محسن بخاری کی نشاندہی پرگٹر سے برآمد کرلی گئی اندھے قتل کے ملزم محسن شاہ نے قتل کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ لڑکی کا گلہ گھونٹ کر قتل کرنے کے بعد لاش گٹر میں پھینک دی گئی ہےپولیس کے مطابق مقتولہ حلیمہ سعدیہ کے والد زاہد شاہ بخاری نے 16 اگست کو لڑکی کی گمشدگی کی رپورٹ تھانہ پولیس عباسپور میں درج کرائی تھی کہ میں رات کو اپنی بھابی کے ساتھ ہسپتال گیا تھا اور رات دس بجے گھر واپسی پر مجھے اسی بیٹی حلیمہ نے کھانا دیا اور سب گھر والے سو گئے مگر صبح حلیمہ کمرہ میں موجود نہ تھی، تلاش بسیار کی اور اس کا معلوم نہ ہو سکا پولیس مختلف پہلوؤں سے گمشدگی کی انوسٹیگیشن کررہی تھی کہ اسی دوران ملزم کی جانب سے فون پر میسج موصول ہوا کہ لڑکی کی تلاش نہ کریں اپنی عزت بچائیں پولیس نے فون میسج کی بنا پر مقتولہ کے قریبی رشتہ دار نوجوان محسن شاہ بخاری ولد مشتاق شاہ بخاری کو گرفتار کر لیا جس نے دوران تفتیش اعتراف کیا کہ اس نے لڑکی کو گلہ دبا کر قتل کرکے نعش اپنے گھر کےگٹر میں پھینک دی ہے جس پر پولیس تھانہ عباسپور نے ملزم کی نشاندہی پرانتظامیہ کی موجودگی میں گٹر سے مقتولہ کی نعش برآمد کر کے تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال عباسپور پہنچائی. جہاں نعش کا پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد نعش کو ورثاء کے حوالے کر دیا گیا پوسٹ مارٹم رپورٹ ابھی تک جاری نہیں ہوسکی ۔ مزید معلومات کے مطابق جس گٹر سے مقتولہ کی لاش برآمد ہوئی اس پر مٹی ڈال کر قاتل کےگھر والوں نے کنسٹریکشن کاکام تیزی سے جاری رکھا ہوا تھا تاہم قتل کی وجہ معلوم کرنے کے لیےتفتیش جاری ہے تیزی سے کی جانے والی کنسٹریکشن کئی سوالات کو جنم دے رہی ہے پوسٹ مارٹم کے بعدمعصومہ مقتولہ حلیمہ بخاری کی نعش اسسٹنٹ کمشنر سید تصور شاہ کاظمی کی نگرانی اور پولیس کی بھاری نفری کی معیت میں ٹنگیڑاں آبائی قبرستان میں لے جائیگی نعش کو سینکڑوں غمزدہ رشتہ داروں کی موجودگی میں سپردِ خاک کردیا گیا پولیس ملزم سے مزید تفتیش کررہی ہے اہم راز کے انکشاف ہونے کی توقع ہےعباسپور پولیس نے اندھے قتل کا سراغ لگا لیا 16 اگست 2021 کو اغوا ہونے والی حلیمہ زاہد کی لاش برآمد ذرائع کے مطابق محسن مشتاق ولد محمد مشتاق قوم سید کو جب پولیس نے گزشتہ روز ڈرامائی انداز میں گررفتار کیا تو انکشاف ہوا کہ ملزم نے حلیمہ زاہدبخاری ولد محمد زاہد بخاری عمر12/13 سال کو قتل کر اُس کی نعش کو گٹر میں پھینک دیا ہے ملزم کی نشاندہی پر ڈی ایس پی سید اشتیاق گیلانی کی نگرانی میں ایڈیشنل ایس ایچ او وقار عظیم،ڈی ایف سی محمد شکیل،معاون ڈی ایف سی سردار مبشر نے ہمراہ پولیس نفری کاروائی کرتے ہوئے نعش برآمد کر لی ہے اور پوسٹ مارٹم کے لیے نعش تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال میں منتقل کر دی گئی ہے ذرائع کے مطابق ملزم سے ابھی مزید انکشافات ہونا باقی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں