فاروق حیدر تاریخ کا ناکام وزیراعظم رہے، اقتدار میں آ کر محرومیوں کا ازالہ کریں گے سلطان محمود چوہدری

مظفرآباد (انٹرویو لیاقت بشیر فاروقی سے)پاکستان تحریک انصاف آزاد کشمیر کے مرکزی صدر سابق وزیر اعظم ممبر کور کمیٹی پاکستان تحریک انصاف بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ مسلہ کشمیر کا پرامن حل وقت کی ضرورت ہے۔اگر دنیا کو امن کی ضرورت ہے تو تنازعہ کشمیر کو ڈاٸیلاگ سے حل کرنا ہو گا۔پاکستان کسی بھی ملک کے لیے جارحانہ عزاٸم نہیں رکھتا۔عالمی وباء کرونا سے نمٹنے کے لیے معاشرے کے ہر فرد کو کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ پاکستان تحریک انصاف نے اپنے پارلیمانی بورڈکے ساتھ تحریک انصاف کے ٹائیگرز جماعت کے کمیٹڈ رہنماؤں سے انٹرویوز کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔پارٹی ٹکٹوں کا فیصلہ پارلیمانی بورڈ اور چیئر مین پاکستان تحریک انصاف وزیر اعظم پاکستان عمران خان ہی کریں گے۔تحریک انصاف آزاد کشمیر میں دو تہائی اکثریت سے زیادہ نشتوں پر کامیابی حاصل کرے گی۔مسلم لیگی حکومت نے 5سالوں میں لوگوں کے ساتھ جو ظلم و ستم کیے ہیں ان کا انجام قریب ہے۔انھوں نے کہا کہ میرٹ کا قتل عام،اداروں کی تباہی،جنگلات کا بے دریغ قتل،ٹورازم کے نام پر معاشی بدحالی کا فروغ حکومتی وزراء آپس میں دست و گریباں ہیں ریاستی مشنری ٹھپ ہو کر رہ چکی ہے۔مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے باریاں لگا کر ریاست کو جی بھر کر لوٹا۔مگر اب ایسا نہیں کرنے دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ پوری ریاست تو ایک طرف صرف وزیر اعظم کے حلقہ انتخاب میں پچاسی سے زائد گاؤں آج بھی زندگی کی بنیادی ضروریات سے کوسوں دور ہیں۔زلزلہ2005کے بعد تھانہ چکار سمیت آزاد کشمیر بھر میں متاثر ہونے والی سرکاری عمارات، تعلیمی ادارے،صحت کے مراکز آج بھی بھوت بنگلا بنے ہوئے ہیں دوسروں کو تحفظ پہنچانے والی پولیس خود عدم تحفظ کا شکار ہے۔ٹی ایچ کیو چکار میں صحت و علاج کی کوئی بھی سہولت میسر نہ ہے۔اگر ایک وزیر اعظم کے حلقہ انتخاب کی یہ حالت ہے تو باقی ریاست کی کیا حالت ہو گی۔آج بھی ریاستی عوام ایکسرے کے لیے بیرون آزاد کشمیر جانے کیلئے مجبور ہیں۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی جانب سے اتنی اندھیر نگری کی امید نہیں تھی مگر شائد فاروق حیدر اپنے پیش رواؤں کی روحوں کو تسکین پہنچانا چاہتے ہیں۔لینڈ مافیا،تجاوزات مافیا،ایوارڈیافتہ رقبہ جات کی خرید و فروخت اور قبضہ مافیا کو کھلی چھوٹ دے کر ریاست کو اندھیر نگری بنا کر رکھ دیا گیا ہے۔ریاست میں ہرطرف لاقانونیت کا بازار گرم ہے۔ انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہم نے اقتدار میں آنے سے قبل ہی ریاستی عوام کو بلا تفریق صحت انصاف کارڈ،احساس پروگرام،لائن آف کنٹرول پر پختہ بنکرز کیلئے فنڈز کا اجراء،مہاجرین کی آباد کاری اور گزارہ الاؤنس میں اضافہ سمیت بے گھر افراد کو آسان سستے گھر تعمیر کر کے ان کے سروں پر چھت ڈالنے کیلئے جنگی بنیادوں پر کام شروع کر رکھا ہے۔بہت جلد وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے خواب کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے پراجیکٹ ”کوئی بھوکھا نہ سوائے“ کا دائرہ کار بھی آزاد کشمیر بھر کے دور دراز کے علاقوں تک لے کر جائیں گے۔انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف آزاد کشمیر کو ٹورازم کا ہب بنائے گی۔نوجوان،ہنر مندوں،پڑھے لکھے مرد و زن کو پاؤں پر کھڑا کرنے کیلئے تحریک انصاف انقلابی پروگرام لے کر آگے بڑھ رہی ہے۔خواتین کو ہر شعبہ پر ترجیح دی جائے گی۔عوام نے تبدیلی کا ساتھ دینے کا عزم کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے خواب ریاست مدینہ کو پورا کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے جلد آزاد کشمیر میں تحریک انصاف کی حکومت قائم ہو گی۔ انھوں نے کہا کہ گزشتہ سال سے بھارتی بے رحمانہ،ظالمانہ لاک ڈاؤن نے مقبوضہ وادی کو موت کی وادی میں دھکیل رکھا ہے۔ جس پر ساری دنیا کو متوجہ کرنے کیلئے جدوجہد کی۔ اسی سلسلہ میں وزیر اعظم پاکستان نے اپنے آپ کو سفیر کشمیر کہتے ہوئے اقوام متحدہ میں بھی جان دار نمائندگی کی۔ جس پر مجبور ہو کر بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کو خیر سگالی کا پیغام بھیجنا پڑا مگر قائد پاکستان عمران خان نے کشمیریوں کی حق خود ارادیت اور ان کی لا زوال قربانیوں کو مد نظر رکھتے ہوئے مکار بھارت کو واضع اور دو ٹوک پیغام دے کر کشمیریوں کے سر فخر سے بلند کر دیے اور دوسری جانب ایسے عناصر کے بھی منہ بند کردیے جو ہنود و یہود کی زبا ن بول کر تقسیم کشمیر کی راہ ہموار کر رہے تھے۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ پاک فوج ہماری آن بان شان ہے۔ہم پاک فوج کی پشت پر کھڑے ہیں۔ملک و قوم پر آنے والی ہر آفات سماوی کے موقع پر پاک فوج کا کردار قوم کے لیے ماں کی طرح ہے۔فوج مخالف بیانیہ کے کردار جلد اپنے انجام سے دوچار ہونگے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں