ڈی ایچ کیو ہسپتال میرپور میں صحت کارڈ کے نام پر داخل مریض صحت کارڈ سے مستفید ھونے کی بجائے لٹنے لگے

میرپور(بیورو رپورٹ)ڈی ایچ کیو ہسپتال میرپور میں صحت کارڈ کے نام پر داخل مریض صحت کارڈ سے مستفید ھونے کی بجائے لٹنے لگے۔صحت کارڈ کے اس ڈرامہ میں مریض کے سب ٹیسٹ الٹرا ساؤنڈ وغیرہ پرائیویٹ کرایا جانے لگا۔صحت کارڈ پر صرف ایک عدد گلوز کی بوتل دو عدد سرنجیں ایک عدد ڈریپ سیٹ ٹوٹل 80 روپے کی ادویات دی جاتی ھیں جبکہ میرم انجیکشن 990 روپے کا وە بھی ڈی۔ایچ۔ کیو ہسپتال میرپور کی بجائے مریض کے ورثاء کو ہسپتال سے باہر کے میڈیکل سٹور سے خریدنا پڑتا ھے

۔میرپور کے ایک شہری نے انکشاف کیا کہ ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال کے ایک مبینہ ملازم نے اسے برجستہ کہہ دیا کہ کیا ضرورت ھے صحت کارڈ پر داخل کرانے اور علاج کرانے کی دوائیاں باہر سے ھی لاؤ مگر اس صحت کارڈ پر جب تک ایڈمٹ رھو گیے روز کے2500روپے اس صحت کارڈ میں سے کٹتے رھیں گیے۔۔ شہری نے عوام سے اپیل کی کہ اس سرکاری ہسپتال میں صحت کارڈ پر اپنا علاج نہ کرائیں۔صحت کارڈ ایک ڈرامہ ھے صحت کارڈ کی دونمبری چکر میں مت آئیں

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں